اپوزیشن صرف سلیکٹد فلم دیکھنا چاہتی اور انہیں ہمارا کام نظر نہیں آتا، حسان خاور

معاون خصوصی وزیر اعلی پنجاب حسان خاور نے کہا ہے کہ اپوزیشن صرف سلیکٹد فلم دیکھنا چاہتی، انہیں ہمارا کام نظر نہیں آتا۔

حسان خاور نے جیلانی پارک میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ شہر باغات کا شہر تھا، ہم نے سالوں اس کے ساتھ جو کیا وہ سب کے سامنے ہے۔ ہمیں اس شہر کو واپس پھولوں کا شہر بنانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ میاواکی جنگل ہماری حکومت کے کلائمٹ چینج ویژن کا مظہر ہے۔ یہ ایک جاپنیز بوٹنیسٹ میاواکی کی تخلیق ہے جس کے زریعے شہروں میں جنگل لگائے جا سکتے ہیں، یہ تین پرتوں میں ہوتا ہے جس میں مقامی پودے لگتے ہیں اور باہر سے پودے نہیں منگوانے پڑتے۔

لاہور میں 53 میاواکی جنگل لگ چکے ہیں اور دنیا کا سب سے بڑا میاواکی سو کینال کا جنگل سگیاں لاہور میں موجود ہے۔ دوسرا انڈسٹریل اسٹیٹ میں ہے جو پچاس کینال پر محیط ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت کے آنے سے پہلے پچیس ہزار پودے لگا کرتے تھے اور ہم یہ عدد پانچ لاکھ تک لے گئے ہیں، حکومت کے اس کام میں شہریوں اور پرائیوٹ اداروں کو بھی اپنا حصہ ڈالنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ اکیسویں صدی میں دنیا گلوبل ویلیج بن چکی ہے اور تمام دنیا میں کورونا کی وجہ سے معاشی بحران آیا تھا۔ ہم جب آئے تو ہمیں آئی۔ایم۔ایف کے پاس جانا پڑا۔

ان کا کہنا تھا کہ جہاں تک مہنگائی کی بات ہے اس سے میں متفق ہوں مگر ترقیاتی پروگرامز کو پس پشت نہیں ڈالا جا سکتا۔ تاریخ میں پہلی بار پنجاب کا ساڑھے چھ سو ارب کا بجٹ ترقیاتی پروگرامز کے لیے رکھا گیا ہے۔

حسان خاور نے کہا کہ اپوزیشن صرف سلیکٹیڈ فلم دیکھنا چاہتی ہے، انہیں اٹھائیس ارب منی لانڈرنگ کی مد میں کرپشن نظر نہیں آتی۔

Follow Our News Page

Leave a Comment